سکول ،کالج کے بچوں کے لئے ادبی مواد
بزم ادب

badal۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰بادل کیسے بنتے ھیں۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰

سورج کی حرارت کی وجہ سے ندی، نالوں، دریاؤں، نہروں سے پانی بخارات بن کر اْڑ جاتا ہے پودوںکی سطح سے بھی پانی بخارات بن کر اڑ جاتا ہے ۔ یہ بخارات ٹرانسپائریشن کا عمل کہلاتاہے۔ یہ بخارات ہوا میں شامل ہوجاتے ہیں لگاتارسورج کی حرارت کی وجہ سے گرم ہوا چلتی ہے، ہوا پھیلتی ہے اور ٹھنڈی ہو جاتی ہے۔ ٹھنڈی ہوا بخارات کو اپنے اندر اتنا جزب نہیں کر سکتی جتنا گرم ہو ا کرتی ہے، بخارات جب چھوٹے چھوٹے پانی کے قطروں کی شکل میں بھاپ بناتے ہیں تو بادل کی شکل اختیار کر لیتے ہیں، جب پانی کے چھوٹے چھوٹے قطرے مزید ٹھنڈے ہو جاتے ہیں تو مل کر بڑے قطروں میں تبدیل ہو جاتے ہیں یہ بڑے قطرے بارش یا برف کی شکل اختیار کر لیتے ہیں۔ بارش کا پانی دوبارہ ندی نالوں، دریاؤں، نہرو ں یا زمین میں واپس آجاتاہے۔ نہروں، دریاؤؤں وغیرہ سے پانی سمندرمیں چلاجاتا ہے۔
ایک سکینڈ میں تقریبا 16))سولہ میلین ٹن پانی زمین سے بخارات بن کر اڑتا ہے۔بارش کی رفتار 8کلومیٹرسے10کلومیٹرفی گھنٹہ ہے، بادل تین قسم کے ہوتے ہیں ۔ زمین سے اونچائی کی بنیاد پر بادل تین قسم کے ہوتے ہیں۔
( Low cloud) یہ پانی کے قطروں سے بنتے ہیں اورزمین سے 2000 میٹربلندہوتے ہیں۔ (Medium cloud) یہ بھی پانی کے قطروں سے بنتے ہیں لیکن یہ زمین سے دو ہزار (2000)سے (7000)میٹر بلند ہوتے ہیں۔ (High cloud ) عام طورپر برف کے ٹکڑوں سے مل کر بنتے ہیں، اور یہ زمین سے 5,500سے14000میٹربلند ہوتے ہیں، یہ بادل عموماً کالے رنگ کے ہوتے ہیں۔
صبح سویرے یارات کے وقت بخارات بھاپ کی شکل میں ہوا میں شامل ہوجاتے ہیںاورپھر زمین پرشبنم کی شکل میں آتے ہیں۔ سردیوں میں جب صبح کے وقت درجہ حرارت بہت کم ہوتا ہے توپانی کے قطرے جم جاتے ہیں اور دھند کی شکل اختیار کر لیتے ہیں۔ ٓٓ

FacebookTwitterGoogle+Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *